Home / Pakistan / اخلاقی طور پر نااہل شخص جماعت کا سربراہ برا لگتا ہے، چیف جسٹس ہائیکورٹ
ethically a discolified person looks bad as a head of party

اخلاقی طور پر نااہل شخص جماعت کا سربراہ برا لگتا ہے، چیف جسٹس ہائیکورٹ

لاہور: لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے انتخابی اصلاحاتی ایکٹ2017 کیخلاف دائر درخواستوں کے قابل سماعت ہونے پر مزید دلائل طلب کرتے ہوئے ریمارکس دیے ہیں کہ اخلاقی طور برا لگتا ہے کہ نااہل شخص کسی سیاسی جماعت کا سربراہ بنے، مگر برا یا عجیب لگنے کی بنیاد پر قانون کالعدم نہیں کیے جاتے۔
فاضل عدالت نے انتخابی اصلاحاتی ایکٹ 2017ء کیخلاف اشتیاق چوہدری ایڈووکیٹ سمیت دیگر کی درخواستوں کے قابل سماعت ہونے کے معاملے پر سماعت کی، وفاقی حکومت کے وکیل ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کوبتایا کہ اسی معاملے پر درخواستوں سپریم کورٹ میں بھی زیر التوا ہیں۔ درخواست گزاروں کے وکلا نے موقف اختیار کیا کہ اس ایکٹ کے ذریعے ایک نااہل شخص کو سیاسی جماعت کا سربراہ بنایا گیا ہے، یہ اقدام بدنیتی پر مبنی ہے لہذا ہائیکورٹ اسکا جائزہ لے سکتی ہے۔
اس پر فاضل چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آئین کے آرٹیکل 17کے تحت کسی بھی شخص کو سیاسی جماعت بنانے کا حق حاصل ہے، آئین میں اور انتخابی قوانین میں کہیں یہ نہیں لکھا ہوا کہ نااہل شخص یا ڈیفالٹر قرار دیا گیا شخص سیاسی جماعت کا سربراہ نہیں بنا سکتا، جس پر درخواست گزاروں کے وکلا نے کہا اخلاقی طور پر دیکھا جائے تو یہ بہت ہی عجیب ہے اور برا لگتا ہے کہ سپریم کورٹ نے جس شخص کو کرپشن پر نااہل کیا اس شخص کو قانون میں ترمیم کرکے سیاسی جماعت کا سربراہ بنا دیا گیا ہے، جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اخلاقی طور پر ہو سکتا ہے کہ کوئی بات عجیب یا بری لگے لیکن عدلیہ عجیب یا برے لگنے کی بنیاد پر نہیں بلکہ آئین اور قانون کے مطابق فیصلے کرتی ہے۔درخواست گزار وکلا نے کہا عدالت نے ایک فلٹر بھی لگانا ہوتا ہے اس طرح تو کوئی بھی دہشت گرد سیاسی جماعت بنا سکتا ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا فلٹریشن کاکام کرنا عدلیہ کی ذمے داری نہیں، یہ بات پارلیمنٹ میں لیکر جائیں اور پارلیمنٹ کو بتائیں کہ کیا درست اور کیا غلط ہے، عدلیہ ایسے معاملات میں مداخلت نہیں کر سکتی۔ جسٹس سید منصور علی شاہ نے مزید ریمارکس دیے کہ جمہوریت میں ووٹرز کی رائے کو ہی مقدم سمجھا جاتا ہے، پاکستان کے آئین میں لکھا ہے کہ ووٹرز جس کوچاہیں اپنا نمائندہ منتخب کریں، آئین نے ووٹرز کو یہ حق دیاہے کہ وہ کسی ڈیفالٹر کو ووٹ دیں یا کسی نااہل کو ووٹ دیں۔

Check Also

شہباز شریف نے چوہدری نثار کو سینیٹ انتخابات میں متحرک کردار ادا کرنے پر راضی کر لیا

وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے چوہدری نثار کو متحرک کردار ادا کرنے پر راضی ...

Leave a Reply

%d bloggers like this: