Home / World / صحافیوں کو دھمکیاں دینے پر ٹرمپ کےسابق مشیر کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند

صحافیوں کو دھمکیاں دینے پر ٹرمپ کےسابق مشیر کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے صحافیوں کو دھمکیاں دینے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سابق مشیر راجر اسٹون کا  اکاؤنٹ بند کردیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی  نشریاتی ادارے سی این این کے صحافیوں کے ساتھ بدتمیزی  سے پیش آنے اور انہیں دھمکیاں دینا  امریکی صدر کے قریبی دوست کو مہنگا پڑگیا۔ راجر اسٹون نے ناصرف سینئر صحافیوں کا نام لے کر انہیں سنگیں نتائج کی دھمکیاں دیں بلکہ ٹرمپ مخالف اور حکومت پر تنقید کرنے والے کالم نگاروں کو بھی نہیں بخشا۔

یہ خبر بھی پڑھیں: سابق امریکی صدر بارک اوباما کو نئی نوکری مل گئی

سابق مشیر نے صحافیوں پر الزام لگایا کہ وہ ٹرمپ انتظامیہ کے خلاف جعلی اور بے بنیاد خبریں شائع کررہے ہیں جس پر انہیں سنگین نتائج بھگتنے پڑیں گے۔ راجر اسٹون نے ٹوئٹر پر ناقد صحافیوں کو مغلظات بکیں اور انہیں برا بھلا کہا جس پر ٹوئٹر نے ایکشن لیتے ہوئے ان کا اکاؤنٹ بند کردیا۔

ٹوئٹر انتظامیہ کا کہنا ہے کہ قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی اور لوگوں کو دھمکانے کے لیے ٹوئٹر کا پلیٹ فارم استعمال کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جاسکتی اور اصولوں کے برخلاف ٹوئٹ کرنے پر راجر اسٹون کا اکاؤنٹ بند کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں کہ راجر اسٹون کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند ہوا ہو اس سے پہلے بھی میڈیا نمائندگان کو دھمکی آمیز پیغامات کرنے پر ان کا اکاؤنٹ بند کیا گیا تھا۔

Check Also

بابری مسجد شہید کرنے والے سکھ نے قبول اسلام کے بعد 90 مساجد بنا دیں

نئی دہلی: بابری مسجد کو شہید کرنے والے سکھ نے قبول اسلام کے بعد 90 ...

Leave a Reply

%d bloggers like this: